اندر پست / بالوں کا گرنا / بالوں کی پیداوار

تعریفِ مرض: اس مرض میں، سر، ابرو، اور داڑھی کے بال گِر جاتے ہیں۔

وجوہات: سل، دق، اور پرانی بیماریوں کے باعث بالوں کی غذا کا کم ہو جانا یا بوڑھے آدمیوں/ عورتوں میں خشکی کے سبب یہ عارضہ ہو جاتا ہے۔ سر کے جِلدی امراض کے باعث بھی بال گر جاتے ہیں۔

علامات: جِلد کے بال مکمل طرح گر جاتے ہیں اور اس جگہ سے خشکی جھڑتی رہتی ہے۔ جب پیدائشی طور پر یہ مرض ہو تو آہستہ آہستہ شروع ہو کر برسوں کے بعد بال گر جاتےہیں۔ بڑھاپے میں جب یہ مرض ہوتا ہے تو، پہلے کن پٹی اور چندیا کے بال گر جاتے ہیں اور اس کا علاج اس وقت میں تقریباً ناممکن ہوتا ہے۔

علاج 1: جس جگہ بال نہ ہوں وہاں روغنِ زردیِ بیضہِ مرغ لگانا بہت مفید ہے۔ اس سے بال پیدا ہونا شروع ہو جائیں گے اور اگر جھڑ رہیں ہیں تو گرنا بند ہو جائیں گے۔

علاج 2: آملہ کو ایک دن پہلے بھگو دینا چاہئیے، جب نرم ہو جائیں تو ان کو ہاتھ سے مل کر ان کی گٹھلیاں نکال دی جائیں اور پانی کام میں لائیں اور بالوں کو اس پانی سے دھوئیں۔ استعمال کرنے سے پہلے پانی کو نتھار لیں تاکہ آملہ کے اجزاء پانی میں نہ رہیں۔ ایک خاص بات کا خیال رکھنا ضروری ہے کہ گرم پانی سے سر کے بال گرتے ہیں۔ لہذا آملہ کا پانی موسمی اعتدال کے مطابق استعمال کریں۔

Add a Comment

Your email address will not be published. Required fields are marked *